15 سالہ عراقی نوجوان

15 سالہ عراقی نوجوان نے اپنی جان کی بازی لگا کر 165 افراد کی جانیں بچا لیں

قافلے کی قیادت کرنے والے شخص نے اپنے ساتھیوں سے کہا میں تمہارے سامنے کچھ فاصلے پہ چلتا رہتا ہوں اور تم لوگ لائن کی صورت میں میرے پیچھے چلتے رہنا اور اگر میں کسی بارودی سرنگ کا شکار ہو جاتا ہوں تو کوئی دوسرا فرد اس قافلے کی قیادت سنبھال کر اسی طریقے سے اسے آگے بڑھاتا رہے۔

۲۹ شهریور ۱۳۹۵ ساعت ۲۲:۴۹ 160 بازدید
{$pos17}