کد خبر ۸۷۴۳ انتشار : ۱۰ مهر ۱۳۹۸ ساعت ۱۶:۳۴
حرمین شریفین کی حفاظت

آل سعود میں حرمین شریفین کی حفاظت کی صلاحیت نہیں

وفاق المدارس الشیعہ پاکستان کے نائب نے کہا ہے کہ نہتے حوثی قبائل کے مقابلے کی سکت نہ رکھنے والے آل سعود، حرمین شریفین کی حفاظت کی صلاحیت نہیں رکھتے۔

پاکستان کے شہرلاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاق المدارس الشیعہ پاکستان کے نائب صدر علامہ قاضی نیاز حسین نقوی نے کہا کہ تباہ شدہ یمن کے حوثی قبائل کے اتحاد انصاراللہ کے ہاتھوں آرامکو کمپنی اور نجران میں بدترین شکست سے آل سعود کی دفاعی صلاحیت کی ناکامی پوری دنیا نے دیکھ لی ہے، جس سے عالَم اسلام کے دینی، ایمانی و روحانی مراکز حرمین شریفین کی حفاظت کیلئے سعودی حکومت نے خود کو نااہل ثابت کر دیاہے۔

انہوں نے کہا کہ گریٹراسرائیل کے نقشہ میں مکہ اور مدینہ بھی شامل ہیں۔ خدانخواستہ اسرائیل نے جسارت کی تو سعودی حکومت کی دفاعی صلاحیت سب کے سامنے ہے جوکہ کسی بھی قسم کے دفاع کیلئے قطعی ناکام و نااہل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جو ملک 42 ملکی فوجی اتحاد، بے پناہ اسلحہ، امریکی سرپرستی کے باوجود تباہ شدہ یمن کے کمزور گروہ حوثیوں کے ہاتھوں اپنے قیمتی اثاثوں کا دفاع نہیں کر سکا اسرائیل جیسے بدترین مضبوط دشمن کا کیسے مقابلہ کرپائےگا؟ لہٰذا عالَم اسلام کی عزت و عظمت کی بقاء اور حرمین شریفین کے دفاع کیلئے لازم ہے کہ مقامات مقدسہ کی حفاظت اور نظم و نسق کیلئے مسلم ممالک پر مشتمل وسیع کمیٹی بنائی جائے تاکہ اسرائیل ایسی جرات ہی نہ کر سکے۔

اخرین اخبار