کد خبر ۸۵۶۳ انتشار : ۲۱ مرداد ۱۳۹۸ ساعت ۱۷:۲۶
آیت اللہ زکزکی

آیت اللہ زکزکی کی ابتر جسمانی حالت کے بارے میں سات ملکوں کے ڈاکٹروں کا اظہار تشویش

دنیا کے سات ملکوں کے دسیوں ڈاکٹروں نے حکومت نائیجیریا کے نام ایک خط ارسال کرکے آیت اللہ شیخ زکزکی کی انتہائی افسوسناک جسمانی حالت پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ان کے جلد علاج و معالجے کی ضرورت پر زوردیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق دنیا کے سات ملکوں کے ایک سو اڑتالیس ڈاکٹروں نے جن میں ایرانی اور غیر ایرانی ڈاکٹر شامل ہیں نائیجیریا کی اسلامی تحریک کے بانی آیت اللہ شیخ زکزکی کی میڈیکل رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے جس میں کہا گیا ہے کہ ان کے خون میں لیڈ پوائزیننگ یا زہریلا مادہ تیزی کے ساتھ پھیلتا جارہا ہے جو بہت ہی خطرناک ۔ ان ڈاکٹروں نے کہا کہ شیخ آیت اللہ زکزکی کو جلد سے جلد ایک اچھے اور بڑے اسپتال میں داخل کرائے جانے کی ضرورت ہے ۔ یہ خط جس پر ہندوستان،پاکستان، لبنان، عراق، افغانستان، شام اور ایران کے ڈاکٹروں نے دستخط کئے ہیں تہران میں نائیجیریا کے سفارتخانے کے حوالے کردیا گیا ہے۔ یہ ایسی حالت میں ہے کہ نائیجیریا کی حکومت نے آیت اللہ شیخ زکزکی اور ان کی اہلیہ کو علاج کے لئے ہندوستان بھیجنے کے لئے نئی شرطیں عائد کردی ہیں۔ نائیجیریا کے صوبے کادونا کے کمشنر برائے سیکورٹی اور داخلہ امور نے کہا ہے کہ شیخ زکزکی کو اسی وقت علاج کے لئے ہندوستان بھیجا جائے گا جب اسپتال میں نائیجیریا کی وزارت خارجہ اہلکاروں کو ان کے پاس جانے کی اجازت ہوگی اور خود شیخ زکزکی کی دو افراد ضمانت لیں گے۔یہ ایسی حالت میں ہے کہ شیخ زکزکی اور ان کی اہلیہ کے ہمراہ نائیجیریا کی سیکورٹی فورس کے افسران بھی ہندوستان جائیں گے۔

.......

اخرین اخبار