کد خبر ۷۴۰ انتشار : ۲۳ شهریور ۱۳۹۵ ساعت ۲۲:۰۴
ایران کے وزیر دفاع

شام کا بحران حل کرنے کے لیے جنگ بندی سے بھرپور فائدہ اٹھائیں: ایران کے وزیر دفاع

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیردفاع نے شام کی جنگ کے سبھی فریقوں سے کہا ہے کہ وہ جنگ بندی کے نتیجے میں ہاتھ آئے موقع سے بھرپور فائدہ اٹھائیں تاکہ شام کا بحران حل ہوسکے

ایران کے وزیردفاع  بریگیڈیر جنرل حسین دہقان نے شام میں جنگ بندی اور حماہ اور اد لب صوبوں میں جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کا ذکرکرتے ہوئے کہاکہ جنگ بندی ایک ایسی چیز ہے جس پر جنگ کے سبھی متحارب فریق تیار ہیں -

انہوں نے اس سوال کے جواب میں کہ کیا شام میں جنگ بندی پائیدار ہوگی کہا کہ سبھی فریقوں کو چاہئے کہ وہ شام کی قانونی حکومت کی بات پر عمل کریں اور یہ ایک اہم بات ہے کہ شام کا بحران فوجی طریقے سے حل نہیں ہوسکتا-

ایرانی وزیردفاع نے یہ بھی  کہا کہ جنگ بندی سے محصورعلاقوں میں انسان دوستانہ امداد پہنچانے کے لئے بھرپور استفادہ کیا جانا چاہئے - واضح رہے کہ روس اور امریکا کے درمیان ہونے والے سمجھوتے کے مطابق شام میں پیر کی رات سے ایک ہفتے کے لئے جنگ بندی نافذ ہوئی ہے-

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ جنگ بندی سے داعش اور فتح الشام محاذ نامی دہشت گرد گروہ مسثنی ہیں اور ان کے ٹھکانوں پر حملے کئے جاسکتے ہیں - دہشت گرد گروہ جبہۃ ا لنصرہ نے اپنا نام  تبدیل کرکے فتح الشام محاذ رکھ لیا ہے-

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اخبار مرتبط :

    اخرین اخبار