کد خبر ۶۹۶۳ انتشار : ۲۱ مهر ۱۳۹۷ ساعت ۱۱:۳۹
حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصراللہ:

ام عماد صبر و استقامت کا مظہر/عرب حکمراں ٹرمپ پر بھروسہ نہ کریں/ٹرمپ نے بھی ایران کی طاقت اور قدرت کا اعتراف کرلیا

حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصراللہ نے کہا ہے کہ مزاحمت کا راستہ انتہائی مہنگا راستہ ہے جس میں بہترین جوانوں کی قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کرنا پڑتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصر اللہ نے شہیدان عماد مغنیہ کی والدہ مرحومہ کی مجلس ترجیم سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہید ان عماد مغنیہ کی والدہ مرحومہ صبر و استقامت اور پائداری کا مظہر تھی۔

انھوں نے کہا کہ ام مغنیہ ایک باہمت، با ایمان اور ذمہ دار خاتون تھیں اور انھیں عالم اسلام میں جاری حالات کے بارے میں اپنی ذمہ داری کاحساس تھا۔ انھوں نے کہا کہ ام مغنیہ نے اپنے بیٹوں کی اچھی تربیت کرکے انھیں معاشرے کے حوالے کیا اور ان کے فرزندوں نے بھی آخری دم تک اپنی ذمہ داری کو احسن طریقہ سے ادا کیا۔

سید حسن نصر اللہ نے علاقائی حالات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی پوری توجہ سعودی عرب اور اس کے اتحادی ممالک سے پیسہ وصول کرنے پر مرکوز کررکھی ہے امریکہ کے سابق صدور سعودی عرب سے سیاسی پالیسیوں کے ذریعہ رقم وصول کرتے تھے لیکن وہی کام آج ٹرمپ آشکارا اور اعلانیہ کررہا ہے۔

انھوں نے کہا کہ ٹرمپ سعودی عرب کی تحقیراور تذلیل کرکے اس سے رقم وصول کررہا ہے ٹرمپ کے رویہ میں کہیں بھی انسانی حقوق اور جمہوریت کی حمایت نظر نہیں آتی ۔

حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصر اللہ نے کہا کہ ٹرمپ نے ایران کی طاقت اور قدرت کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ ایران 12 منٹ میں پورے خطے پر مسلط ہوسکتا ہے اور یہ بات وہی شخص کرسکتا ہے جسے ایران کی طاقت اور قدرت کا اندازہ ہے۔

.......

 

اخرین اخبار