کد خبر ۵۶۳۸ انتشار : ۱۱ شهریور ۱۳۹۶ ساعت ۱۸:۲۸
اپنی جوتی اپنے سر؛

یورپ کو ہزاروں انتہا پسندوں کا سامنا

دہشت گردی کے خلاف جنگ میں یورپی یونین کے کوآرڈی نیٹر نے یورپ میں انتہا پسندوں کے حملوں کی بابت خـبردار کیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق یورپی یونین کے انسداد دہشت گردی کے کوآرڈی نیٹر جلز ڈی کرچوف نے کہا ہے کہ تقریبا پچاس ہزار انتہا پسند یورپ کے لیے خطرہ بنے ہوئے ہیں۔

انہوں نے دہشت گردانہ حملوں کی بابت خبردار کرتے ہوئے کہا کہ تقریبا اڑتیس ہزار انتہا پسند صرف برطانیہ میں موجود ہیں جن میں سے تین ہزار کو برطانوی خفیہ اداروں نے بھی انتہائی خطرناک عناصر کی فہرست میں شامل کر رکھا ہے جبکہ پانچ سو افراد کی مسلسل نگرانی کی جارہی ہے۔

یورپی یونین کے انسداد دہشت گردی کے کوآرڈی نیٹر نے مزید کہا کہ سترہ ہزار انتہا پسند عناصر فرانس میں، پانچ ہزار کے قریب اسپین میں اور دو ہزار کے قریب بیلجیئم میں موجود ہیں۔جلز ڈی کرچوف کا کہنا تھا کہ آئندہ پانچ برس کے دوران یورپ کے ایٹمی بجلی گھروں اور ایئر ٹریفک کنٹرول سسٹم پر داعش کے حملوں کا امکان پایا جاتا ہے۔انہوں نےیورپی ملکوں پر زور دیا کہ وہ انتہائی خطرناک عناصر کا پتہ لگائیں اور ان کی مسلسل نگرانی کے منصوبے پر عملدرآمد کریں۔

اخبار مرتبط :

    اخرین اخبار