کد خبر ۵۶۳۳ انتشار : ۸ شهریور ۱۳۹۶ ساعت ۱۹:۱۳
فیملی

بیوی سے اظہار محبت(۲)

اگر خدا نخواستہ بیوی کے ذہن میں یہ بیٹھ جائے کہ آپ اس سے محبت نہیں کرتے تو آپ کے گھر کا حال ہمیشہ بگڑا رہے گا اور اسے اپنے تئیں یہ احساس دامن گیر رہے گا کہ کیوں میں ایسے شوہر کے واسطہ اپنی جان کھپاؤں جس کے دل میں میرے لئے کوئی جگہ نہیں ہے اب جبکہ آپ کا گھر عشق اور محبت سے خالی ہوگیا تو اب وہ جلادینے والی جہنم کی آگ میں تبدیل ہوجائے گا۔

ہم نے گذشتہ گفتگو میں اپنے قارئین کی توجہ اس امر کی جانب مبذول کرائی تھی کہ:مشترکہ زندگی  کی کامیابی کا راز اور تمام مشکلات کا حل زوجہ سے اظہار محبت کرنا ہے  اگر آپ چاہتے ہیں  کہ آپ کی   شریک حیات کا دل اس طرح مسخر ہوجائے کہ  وہ  آپ کی   مطیع اور فرمانبردار رہے ، اور آپ کی ازدواجی زندگی خوش و خرم بسر ہو ، اگر  آپ یہ چاہتے ہیں  کہ اس کو  آپ کےگھر اور بچوں میں مزید دلچسپی ہو ،اگر  یہ چاہتے ہیں کہ صرف آپ   اس کے دل  پر راج کریں ،اگر  یہ چاہتے ہیں  کہ وہ آخر عمر تک  آپ کی   وفادار رہے  ،اس کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ آپ اپنی زوجہ سے اظہار محبت کریں،لہذا اس بحث کو مکمل پڑھنے کے لئے اس لنک پر کلک کیجئے!
بیوی سے اظہار محبت(۱)
گذشتہ سے پیوستہ:چنانچہ اگر وہ یہ جان لے کہ اسے  آپ کی  محبوبیت نصیب نہیں ہوئی ہے  تو وہ گھر اور زندگی دونوں سے بیزار ہوجائے گی  اور افسردگی اس کے پورے وجود کو گھیر لے گی امور خانہ اور بچوں کی نسبت  سرد مہری کا شکار ہوجائے گی ، آپ کے گھر کا حال ہمیشہ بگڑا رہے گا اور اسے اپنے تئیں یہ احساس دامن گیر رہے گا  کہ کیوں  میں ایسے شوہر کے واسطہ  اپنی جان  کھپاؤں جس کے دل میں میرے لئے  کوئی جگہ نہیں ہے  اب جبکہ آپ کا  گھر عشق  اور محبت سے خالی ہوگیا تو  اب وہ جلادینے والی جہنم کی آگ میں تبدیل ہوجائے گا اگرچہ اس کا سارا کا سارا اسباب اور سامان ظاہری اعتبار سے منظم بھی  کیوں نہ ہو  لیکن چونکہ اس سے محبت اور عشق کی بوئے عطر  نہیں آرہی ہے تو اس میں کوئی رونق اور برکت  باقی نہ  رہے گی   اور یہ بھی ممکن ہے کہ  آپ کی شریک حیات  نفسیاتی اور  روحی امراض میں مبتلاء ہوجائے  نیز  یہ بھی ممکن ہے کہ اس محبوبیت کے نقصان کی بھرپائی کرنے کے لئے کسی اور کے دل میں جگہ بنانے کی کوشش کرے اور یہ بھی ممکن ہے اس قدر اپنے شوہر اور گھر سے بیزار ہوجائے   کہ وہ جدائی کو اس بے رونق  زندگی پر ترجیح دیتے ہوئے تم سے طلاق کا مطالبہ کرلے  پس ان تمام امور کی ذمہ داری مرد کے اوپر ہے چونکہ وہ صحیح طریقہ سے زوجہ کو نہیں سمجھ سکا ہے  آپ یقین کریں ہمارے سماج میں زیادہ تر طلاقیں اسی سرد مہری کے سبب واقع ہوتی ہیں۔
نفسیاتی اعتبار سے خواتین کو محبت کی زیادہ ضرورت ہوتی ہے  اور شوہر کی لاپروائی  اور اس کا مسلسل کاموں میں مشغول رہنا بسا اوقات اس کو اپنی شریک حیات کی روحی حالت  سے غافل کردیتا ہے جس کے سبب بہت سے طلاقیں ہمارے سماج میں رونما ہوتی ہیں۔

اخرین اخبار